April 16, 2024

Warning: sprintf(): Too few arguments in /www/wwwroot/viscomemoryfoammattress.com/wp-content/themes/chromenews/lib/breadcrumb-trail/inc/breadcrumbs.php on line 253

ج کیا اور غزہ میں جنگ بندی اور اسرائیل کو فوجی امداد فراہم کرنے کا سلسلہ بند کرنے کا مطالبہ کیا۔ مظاہرین نے ایئر پورٹ کے باہر کی سڑک بلاک کی، دائرہ بنا کر مارچ کیا اور فلسطین حامی نعرے لگائے۔ ایئر پورٹ حکام نے کہا کہ احتجاج کےدوران انٹرنیشنل ٹرمینل کھلا تھا جبکہ مسافروں کیلئے روٹ تبدیل کر دیئے گئے تھے۔

A pro-Palestinian demonstration at the airport. Photo: X

امریکہ کے سین فرانسسکو انٹرنیشنل ایئر پورٹ پر سیکٹروں اسرائیل حماس جنگ مخالف مظاہرین نے  محصور غزہ میں جنگ بندی اور امریکہ کے اسرائیل کو فوجی امداد فراہم کرنے کے سلسلےپر روک لگانے کا مطالبہ کیا ہے۔ مظاہرین نے احتجاج کے دوران انٹرنیشنل ٹرمینل بلاک کیا تھا۔ بدھ کو جائے وقوع سے لی گئی تصاویر میں دیکھا جاسکتا ہے کہ مظاہرین نے ہاتھوں میں بینرلئے ہوئے ہیں جن پرمختلف پیغامات قلمبند ہیں، جیسے’’غزہ کے حق میں دنیا کو روک دیں‘‘ اور ’’اسرائیل کو فوجی امداد روانہ کرنا بند کریں‘‘ وغیرہ۔

ایئر پورٹ کے حکام نے بتایا کہ احتجاج کے دوران انٹرنیشنل ٹرمینل کھلاہوا تھا جبکہ مسافروں کیلئے روٹ تبدیل کر دیئے گئے تھے۔مظاہرین نے ایئر پورٹ کے باہر بھی سڑک بلاک کر دی تھی، دائرہ بنا کر مارچ کیا تھا جبکہ نعرے بھی لگائے تھے۔ جن مسافروں کو انٹرنیشنل ٹرمینل جانا تھا انہیں رینٹل کار سینٹرمیں ہی رکنے اور وہاں سے ٹرمینل کیلئے ایئر ٹرین لینے کی ہدایت دی گئی تھی۔ تاہم، اس سرگرمی کے دوران کسی بھی پرواز کے منسوخ ہونے یا ملتوی ہونے کی کوئی اطلاع نہیں ہے۔



اس حوالے سے ایک احتجاج کی قیادت کرنے والی جینیفر ترانگ نے کہا کہ ہم یہاں نہیں رہنا چاہئے۔ ہم نے تمام کوششیں کر ڈالیں۔ ہم نے منتخب شدہ حکام سے ملاقات کی، ہم نے خط لکھےاور شہر بھر میں قرار دادیں دیں۔ہمیں سڑکوں پر لایا گیاہے۔ ہم نے میڈیا میں خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔ دنیا غزہ میں اسرائیل کی جنگ کی مذمت کر رہی ہے اور ہمارے سیاستداں اسرائیل کو ایندھن فراہم کر کے اس نسل کشی کو ہوا دے رہے ہیں۔ہم غزہ میں فوری جنگ بندی اور محاصرہ ختم کرنے کا مطالبہ کرتے ہیں۔باضمیر افرادکے طورپر ہمارا یہ فرض ہے کہ ہم اس نسل کشی کو ختم کرنے کیلئے کارروائیاں کریں۔

ہزار افراد جاں بحق جبکہ ۷۰؍ ہزار سے زائد افراد زخمی ہوئے ہیں۔ مہلوکین میں زیادہ تعداد بچوں کی ہے۔اسرائیلی جارحیت نے غزہ کی ۸۵؍ فیصد آبادی کو اندرونی نقل مکانی پر مجبور کیا ہے جبکہ یو این کے مطابق خطے کا ۶۰؍ فیصد ڈھانچہ مکمل طورپر تباہ ہو گیا ہے۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *